سخن شناس حضرات کیلئے بہترین شاعری


- -

راتوں کو تصور ہے ان کا اور چپکے چپکے رونا ہے


اشتہار


راتوں کو تصور ہے ان کا اور چپکے چپکے رونا ہے
اے صبح کے تارے تو ہی بتا انجام مرا کیا ہونا ہے

ان نو رس آنکھوں والوں کا کیا ہنسنا ہے کیا رونا ہے
برسے ہوئے سچے موتی ہیں بہتا ہوا خالص سونا ہے

دل کو کھویا خود بھی کھوئے دنیا کھوئی دین بھی کھویا
یہ گم شدگی ہے تو اک دن اے دوست تجھے بھی کھونا ہے

تمییز کمال و نقص اٹھا یہ تو روشن ہے دنیا پر
میں چندن ہوں تو کندن ہے میں مٹی ہوں تو سونا ہے

تو یہ نہ سمجھ للہ کہ ہے تسکین ترے دیوانوں کو
وحشت میں ہمارا ہنس پڑنا دراصل ہمارا رونا ہے

ماتم ہے مری آواز شکست ساز دل صد پارہ کا
ساغرؔ میرا نغمہ بھی دیپک کے سروں میں رونا ہے


شاعر/شاعرہ:

تعاون: بابر علی

اشاعت کی تاریخ:

پبلشر: اردو حقائق


Share


Tweet


|

اردو حقائق 2020