سخن شناس حضرات کیلئے بہترین شاعری


- -

مہرباں ہو کے بلا لو مجھے چاہو جس وقت


اشتہار


مہرباں ہو کے بلا لو مجھے چاہو جس وقت
میں گیا وقت نہیں ہوں کہ پھر آ بھی نہ سکوں

ضعف میں طعنہ اغیار کا شکوہ کیا ہے
بات کچھ سر تو نہیں ہے کہ اٹھا بھی نہ سکوں

زہر ملتا ہی نہیں مجھ کو ستم گر ورنہ
کیا قسم ہے ترے ملنے کی کہ کھا بھی نہ سکوں

اس قدر ضبط کہاں ہے کبھی آ بھی نہ سکوں
ستم اتنا تو نہ کیجئے کہ اٹھا بھی نہ سکوں

لگ گئی آگ اگر گھر کو تو اندیشہ کیا
شعلۂ دل تو نہیں ہے کہ بجھا بھی نہ سکوں

تم نہ آئو گے تو مرنے کی ہیں سو تدبیریں
موت کچھ تم تو نہیں ہو کہ بلا بھی نہ سکوں

ہنس کے بلوائیے مت جائے گا سب دل کا گلہ
کیا تصور ہے ہے تمہارا کہ مٹا بھی نہ سکوں


شاعر/شاعرہ:

تعاون: بابر علی

اشاعت کی تاریخ:

پبلشر: اردو حقائق


Share


Tweet


|

اردو حقائق 2020