سخن شناس حضرات کیلئے بہترین شاعری


- -

ان آنکھوں نے کیا کیا تماشہ نہ دیکھا


دل مبتلائے لذت آزار ہی رہا


اس ادا سے وہ جفا کرتے ہیں


بات میری کبھی سنی ہی نہیں


غم سے کہیں نجات ملے چین پائیں ہم


ابھی ہماری محبت کسی کو کیا معلوم


ستم ہی کرنا جفا ہی کرنا


دل کو کیا ہو گیا خدا جانے


شب وصل ضد میں بسر ہو گئی


تیری صورت کو دیکھتا ہوں میں


محبت میں آرام سب چاہتے ہیں


تم آئینہ ہی نہ ہر بار دیکھتے جاؤ


تمہارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا


اس قدر ناز ہے کیوں آپ کو یکتائی کا


جو ہو سکتا ہے اس سے وہ کسی سے ہو نہیں سکتا


ستم ہی کرنا جفا ہی کرنا نگاہ الفت کبھی نہ کرنا


اس نہیں کا کوئی علاج نہیں


دل گیا تم نے لیا ہم کیا کریں



اردو حقائق 2020