سخن شناس حضرات کیلئے بہترین شاعری


- -

ہم آنکھوں سے بھی عرض تمنا نہیں کرتے


ندیم درد محبت بڑا سہارا ہے


راتوں کو تصور ہے ان کا اور چپکے چپکے رونا ہے


حیرت سے تک رہا ہے جہان وفا مجھے


آنکھ تمہاری مست بھی ہے اور مستی کا پیمانہ بھی


نہ کشتی ہے نہ فکر نا خدا ہے


نغمے ہوا نے چھیڑے فطرت کی بانسری میں


دشت میں قیس نہیں کوہ پہ فرہاد نہیں


صدیوں کی شب غم کو سحر ہم نے بنایا



اردو حقائق 2020